Khabardar E-News

اسلام آباد ہائی کورٹ : ٹک ٹاک کی بندش چیلینج ، فریقین کو نوٹسز جاری

9

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اسلام آباد ( نمائندہ خصوصی ) اسلام آباد ہائی کورٹ کے چیف جسٹس اطہر من اللہ نے جمعہ کو ٹک ٹاک بندش کیس کی سماعت کی اور شہری کی درخواست پر فریقین اور متعلقہ حکام کو نوٹسز جاری کیے –
درخواست گزار شہری کی جانب سے مریم فرید ایڈوکیٹ عدالت میں پیش ہوئیں اور عدالت کو بتایا کہ پی ٹی اے نے ٹک ٹاک بند کیا جس کے باعث درخواست گزار کی روزی روٹی سخت متاثر ہوئی –
وکیل کے مطابق پی ٹی اے نے کوئی مناسب حکم بھی جاری نہیں کیا بلکہ پریس ریلیز کے زریعے پابندی عائد کردی،
جس پر چیف جسٹس نے استفسار کیا اور پوچھا کہ کیا ٹک ٹاک پر پابندی پورے پاکستان میں عائد کردی گئی؟ جس پر درخواست گذار کی جانب سے کہا گیا کہ پی ٹی اے نے اخبارات میں پریس ریلیز کے زریعے پورے ملک میں ٹک ٹاک پر پابندی عائد کردی-
جس پر عدالت نے تمام فریقین کو نوٹسز جاری کرکے کیس کی سماعت اگلے ہفتے تک ملتوی کردی –
یاد رہے کہ پی ٹی اے رواں ماہ کے 21 تاریخ کو ایک بار پھر ٹک ٹاک پر پابندی عائد کرتے ہوے کہا تھا کہ ایپ پر نامناسب مواد کی مسلسل موجودگی کے سبب پابندی لگائی گئی ہے۔
بیان کے مطابق انتظامیہ نے مطلع کیے جانے کے باوجود ٹک ٹاک سے مواد ہٹانے کے لیے کوئی اقدامات نہیں کیا گیا ہے –
واضع رہے کہ صدر مملکت ڈاکٹر عارف علوی نے 16 جولائ کو ایک ویڈیو کے ذریعے ٹک ٹاک کی دنیا میں قدم رکھا تھا جس کی تصدیق صدر ہاوس کے ترجمان نے کی تھی –
ترجمان کی جانب سے جاری کیے گئے اعلامیے میں بتایا گیا ہے کہ صدر پاکستان اب ٹک ٹاک پر موجود رہیں گے، جہاں اُن کے مثبت اور حوصلہ افزائی سے متعلق پیغامات شیئر کیے جائیں گے۔

Comments are closed.