Khabardar E-News

کوئٹہ میں لوکل بس اور رکشہ مالکان کی ہڑتال شہریوں کو مشکلات کا سامنا

6

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

کوئٹہ ( خبردار ڈیسک ) صوبائی دارلحکومت کوئٹہ شہر میں آج رکشہ اور لوکل بس مالکان کا ٹریفک پولیس

کے رویے کے خلاف ہڑتال کررکھی ہے جس کے باعث شہریوں کو آمدرفت میں شدید مشکلات کا سامنا ہے

ہرتالی مالکان نے رکشے اور لوکل بسوں کو انسکمب روڈ اور سرکلر روڈ کے سنگم پر لاکر کھڑی کر دی ہیں

اس موقع پر رکشہ یونین اتحاد کے صدر عبدالسلام نے ڈرائیوروں سے خطاب کرتے ہوے کہا کہ شہر کے اندر

24 ہزار سے زائد غیر قانونی رکشے چلتے ہے۔

لیکن ٹریفک انتظامیہ کا رویہ دستاویزات رکھنے والے رکشہ ڈرائیورز اور لوکل بس کے ڈرائیورز کے ساتھ

مناسب نہیں ہے۔

حتی کے بعض ٹریفک سارجنٹس سہالا سال سے ایک چوک پر ڈیوٹی دیتا یے لیکن انکا تبادلہ نہیں ہوتا ہے۔

انہوں نے کہا کہ ٹرئفک پولیس کے وجہ سے شہرمیں غریب ڈرائیورز کا گزارا کرنا مشکل ہے کیونکہ آے روز

ٹریفک پولیس انہیں بڑے بڑے چالان دیتے ہے۔

کوئٹہ میں لوکل بس اور رکشہ مالکان کی ہڑتال شہریوں کو مشکلات کا سامنا

اور رکشہ ڈرائیور ہر ہفتے بھاری بھرکم چالان جمع کرتے ہے۔

انہوں نے کہاکہ شہر میں جو غیر قانونی رکشے چلتے ہے ان پر پوری طور پر پابندی لگا دیی جاے

جب تک حکومت دو نمبر رکشوں کے خلاف کوئی کاروائی نہیں کرے گی اس وقت تک شہر میں ٹرئفک کا

مسلہ حل نہیں ہوگا

صدر رکشہ یونین نے مطالبہ کہا کہ ہمارے ساتھ انصاف کیا جائے ہمارے مسائل کو حل کیا جائے ہم کسی عذاب

میں نہیں جانا جاتے ہے۔

دوسری جانب شہر میں رکشہ ڈرائیوروں کی ہرتال کے باعث شہر یوں کو آمدرفت میں شدید مشکلات کا

سامناکرناپڑا

بعض ڈرائیوروں نے بتایا کہ رکشہ یونین ک زبردستی انہیں ہڑتال کرنے پر مجبور کیا جارہا ہے

رکشا ڈرائیوڑں کے مطابق بعض یونین والوں کی اپنی کئیں رکشہ جو بغیر کاغذات کے ہیں

جنہیں ٹریفک پولیس چالان کرتی ہے یہ تمام یونین والوں کا ذاتی مسلہ ہے باقی رکشہ ڈرائیور جو اپنی روزی

روٹی کمانے کے لیے نکال رہے ہین

ان کو بچوں کا پیٹ پالنے سے روکا جا رہا ہے۔

اس سلسلے میں شہریوں نے بھی حکومت سے مطالبہ کیا ہے کہ ضلعی انتظامیہ فوری طور پر مذکورہ یونین

کے خلاف کاروائی کرے تاکہ شہریوں کو مشکلات سے نجات مل سکے

Comments are closed.