Khabardar E-News

بلوچستان کے قوم پرست رئنما ڈاکٹرعبدالحی بلوچ بہاولپورکے قریب سڑک حادثے میں جان بحق

6

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

کوئٹہ ( خبردار ڈیسک )بلوچستان کے قوم پرست رئنما ڈاکٹرعبدالحی بلوچ بہاولپورکے قریب سڑک حادثے میں

جان بحق ہوا -یہ حادثہ آج اس وقت پیش آیا جب ڈاکٹرعبدالحی بلوچ اپنے ایک ساتھی کے ہمراہ گاڑی میں فیصل

 آباد سے بہاولپور روانہ ہوے

ڈاکٹرعبدالحی بلوچ فیصل آباد میں قوم پرست رئنماوں کی ایک کانفرنس میں شرکت کے لیے کوئٹہ سے گئے

تھے

یہ کانفرنس کل شام کو ختم ہوا تھا جس کے بعد وہ آج بہاولپور جارہے تھے کہ راستے میں یہ حادثہ پیش آیا ہے

کوئٹہ میں ڈاکٹرعبدالحی بلوچ کے قریبی زرائع نے بتایا ہے کہ انکی تدفین کل آبائی علاقے چلگری بھاگ میں

ہوگی

ڈاکٹرعبدالحی بلوچ 1945 میں بلوچستان کے ضلع بولان کے تحصیل بھاگ میں چلگری کے علاقے میں

پیداہوے تھے

اور انہوں نے بنیادی تعلیم چلگھری سے حاصل کی اور ایف ایس سی مستونگ سے کی جبکہ ایم بی بی ایس ڈاو

یونیورسٹی کراچی سے کی

بلوچستان کے قوم پرست رئنما ڈاکٹرعبدالحی بلوچ بہاولپورکے قریب سڑک حادثے میں جان بحق

دوران طالب علمی انہوں نے سیاست کاآغاز کیا اور بلوچ اسٹوڈنٹس آرگنائزیشن ( بی ایس او ) کی بنیاد رکھی

اور 1970 میں نیشنل عوامی پارٹی کے ٹیکٹ پر قومی اسمبلی کے رکن منتخب ہوے تھے

لیکن جب 1974 میں پاکستان کا آئین متفقہ طور پر بنا توبلوچستان خیربخش مر ی اور ڈاکٹرعبدالحی بلوچ نے

اس پر دستخط کرنے سے انکار کردیاتھا

تاہم انہوں نے 1989 میں بلوچستان یوتھ موومنٹ کے نام سے اپنی سیاسی جماعت بنالی

لیکن 1988میں نیشنل آلائنز بنائی جس کے صدر سابق وزیر اعلی بلوچستان نواب اکبرخان بگٹی تھے اور

ڈاکٹرعبدالحی بلوچ نےبطور جنرل سیکرٹری اپنے فرائض سرانجام دیے

جس کے بعد انہوں نے بلوچستان نیشنل موومنٹ بنائی جس میں سابق وزیراعلی سردار اخترجان مینگل صدر

اور داکٹرعبدالحی بلوچ نائب صدر منتخب ہوے

جبکہ 1990 دہائی متحر مہ بے نظیر کے دور حکومت میں ڈاکٹر عبدالحی بلوچ بلوچستان سے سنیٹرمنتخب

ہوے

بلوچ قوم پرست رئنماسردار عطااللہ مینگل کراچی میں انتقال کرگئے

انہوں ے 2005 پاکستان نیشنل پارٹی کے ساتھ انظمام کیا اور نیشنل پارٹی کی بنیاد رکھی تاہم 2008 میں

اختلافات شروع ہوے جس کے باعث 2009 ڈاکٹر مالک بلوچ پارٹی کے مرکزی صدر بنے

جس پر انہوں نے بعد مین اپنا راستہ الگ کرلیا اور 2017 میں سابق سیاسی وقبائلی رءنما میر بلخ شیر مزاری

کی جماعت پاکستان نیشنل ڈیموکراٹک پارٹی کی نہ صرف الیکشن کمیشن کے ساتھ دوبارہ رجسٹریشن کروائی

بلکہ اس کے مرکزی صدر بھی منتخب ہوے تھے

اور گذشتہ روز انہوں نے پنجاب کے شہر فیصل آباد میں ترقی پسندوں کی ایک سمینار میں شرکت کے بعد

بہاولپور چلے گئے تھے جہاں سے وہ آج اپنے ایک ساتھی کے ہمراہ لودھراں جارہے تھے کہ راستے میں

انکی کی گاڑی کو حادثہ پیش آیا جس میں ڈاکٹرعبدالحی اور انکے ساتھی کا انتقال ہوا

انکی میت کل صبع آبائی علاقے بھاگ چلگھری لائی جاے گیا جہاں ایک بجے کےبعد انکی میت کی تدفین ہوگی

Comments are closed.