Khabardar E-News

کوئٹہ : بلوچستان میں 100 سے زیادہ غیرحاضرڈاکٹرز برطرف

19

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

کوئٹہ ( سٹاف رپورٹر ) حکومت بلوچستان نے کوئٹہ سمیت صوبے کے دیگرعلاقوں میں سرکاری ہسپتالوں سےمسلسل غیرحاضر ہونے پر 100 سے زیادہ ڈاکٹرز برطرف کردیے گئے –
یہ بات حکومت بلوچستان کے ترجمان لیاقت شاہوانی نے ہفتہ کو سوشل میڈیا پرجاری ہونے والے ایک ٹویٹ میں کہی ہے –
ترجمان حکومت بلوچستان کے مطابق برطرف کیے گئے زیادہ تر ڈاکٹرز سرکاری ہسپتالوں میں ڈیوٹی سے مسلسل غیرحاضر تھے لیکن تنخوا باقاعدگی کے ساتھ لے رہے تھے –
لیاقت شاہوانی کے مطابق گذشتہ ایک سال کے دوران برطرف کیے گئے زیادہ تر کاتعلق تربت ، سبی ، خصدار اور چمن کے ہسپتالوں سے ہے –
دوسری جانب محکمہ صحت بلوچستان کی جانب سے ہفتہ کو جاری ہونے والے ایک نوٹیفیکیشن کے مطابق مذید 9 ڈاکٹرز نوکریوں سے برخاست کردہےگئے- جن میں بعض لیڈی ڈاکٹرز بھی شامل ہیں –
ادھر ڈپٹی کمشنر چمن جمعہ داد خان مندوخیل نے 24 جولائ کو ڈسٹرکٹ ہسپتال چمن کا دورہ کیا- ہسپتال کے دورے کے موقع پر زیادہ ترڈاکٹرز اور دیگرعملہ غیر پانے پرتشویش کا اظہار کیا اور حکم دیا کہ کوئ بھی سرکاری ڈاکٹر اور دیگر سٹاف پرائیویٹ پریکٹس پر فوری پابندی عائد کرتے ہوے کہا ہے کہ آئندہ کو ئ بھی سرکاری ملازم ڈاکٹر نجی ہسپتالوں میں خدمات سر انجام نہیں دے سکیں گے –
واضع رہے کہ حکومت بلوچستان نے صوبے میں عوام کے لیے صحت کی سہولیات بہتر بنانے کے لیے سال رواں کے پہلے ماہ میں 1026 ڈاکٹرز کوئٹہ سمیت صوبے کے دیگر ہسپتالوں میں عارضی بنیادوں پر تعینات کیے تھے جن میں 496 میڈیکل آفیسر اور 382 لیڈی میڈیکل آفیسرز کے علاوہ 148 ڈینٹل سرجن بھی شامل تھے –

Comments are closed.