Khabardar E-News

پیکا آرڈیننس کے خلاف صحافیوں کا بلوچستان اسمبلی سے واک آؤٹ

7

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

کوئٹہ ( خبردار نیوز ) بلوچستان یونین آف جرنلسٹس کی اپیل پر :صحافیوں کا پیکا ایکٹ کیخلاف جمعرا ت کو

احتجاجا بلوچستان اسمبلی اجلاس کا مکمل بائیکاٹ کیا

اس موقع پر انہوں نے اسمبلی کے مین گیٹ کے سامنے مظاہرہ کیا جس میں صحافیوں کے ساتھ حکومت اور

حزب اختلاف کے بعض ارکان نے بھی شرکت کی

مظاہرین نے پیکا ایکٹ کو مسترد کرتےہو ے کہا کہ وفاقی حکومت بزور طاقت صحافیوں کی آواز کو دبانا

چاہتی ہے،

اس موقع پر بلوچستان اسمبلی کے حزب اختلاف اراکین کی صحافیوں سے اظہار یکجہتی کہا کہ پیکا ایکٹ

کیخلاف صحافیوں کیساتھ ہم آخر وقت تک کھڑے رہیںگے –

بلوچستان نیشنل پارٹی کے رکن اسمبلی ثناء بلوچ نے کہا کہ پیکا ترمیمی آرڈیننس کے خلاف جلد بلوچستان

اسمبلی میں قرارداد منظور کرائی جائے،

اس کے علاوہ پیکا ترمیمی آرڈیننس سے متعلق وفاقی حکومت سے بھی بات کریں گے

پیکا صدارتی آرڈیننس کے خلاف صحافیوں کا بلوچستان اسمبلی سے واک آؤٹ

پشتونخواملی عوامی پارٹی کے پارلیمانی لیڈر نصراللہ زیرے نے کہا کہ پیکا ایکٹ ملک کے آئین کیخلاف ہے

انکے بقول کہ 16ویں صدی میں بھی ایسے قوانین نہیں لائے جاتے تھے

انہوں نے پیکا ایکٹ کی مذمت کرتے ہوے کہا کہ اس سے صحافیوں کو دھمکایا جارہا ہے

تاہم انہوں نے واضع کیا کہ انکی جماعت آزاد صحافت اور آزاد عدلیہ پر یقین رکھتی ہے

اس موقع پر میڈیا سے بات چیت کرتےہوے عوامی نیشنل پارٹی کے پارلیمانی لیڈر اصغر خان اچکزئی نے کہا

کہ انکی جماعت صحافیوں سے اظہار یکجہتی کیلئے ہر فورم پر کھڑی ہے

انہوں نے کہا کہ صدارتی گھر آرڈیننس فیکٹری بنی ہوئی ہے،جہاں سے صحافیوں پر پابندیاں عائد کی جارہی

ہے،

اور ان کالے قوانین کے تحت صحافیوں کی زبان بندی کی جارہی ہے

جسکی ہم کسی صورت میں اجازت نہیں دیں گے

اس سے قبل کراچی میں صحافی اطہر متین کو قتل کرنے کے خلاف اے این پی کے پارلیمانی لیڈر اصغر خان

اچکزئی اور محترمہ شاہینہ کاکڑ نے قراداد پیش کی

جس میں کہا گیا کہ گزشتہ روز روشنیوں کے شہر کراچی میں ایک نجی ٹی وی سے وابسطہ صحافی اطہر تین

کو نامعلوم مسلح افراد نے اندھا دھند کا رنگ دے کر یہ معاملہ سردخانے میں ڈال دیا ۔

اس سے قبل اسلام آباد میں ایک نیوز ایجنسی کے ایڈیٹر اورسینئر صحافی محسن بیگ کو ان کے گھر سے

گرفتار کیا گیا

جہاں صحافی کے گھر کے چادر اور چار دیواری کا تقدس پامال کرنے کے ساتھ ان پر تشد دبھی کیا گیا ۔

جبکہ آئین اور قانون میں آزادی اظہار رائے اورتحریر اور تقریر کی مکمل ضمانت دی گئی ہے

Comments are closed.