Khabardar E-News

کوئٹہ : جونیئراساتذہ کا ریلی کے بعد ایدھی چوک پر دھرنا

13

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

کوٰٹہ ( خبردار نیوز ) بلوچستان کے دارلحکومت کوئٹہ میں جونیئر اساتذہ کے احتجاج کیا ہے اور بعد میں ایک

احتجاجی ریلی نکالی جو شہر کے مختلف شاہراہوں سے ہوتا ہوا ایدھی چوک پہنچ کر ایک دھرنے میں تبدیل ہوا

ہے

جونیئز ٹیچر اور کمیونیٹی ٹیچر کی احتجاجی ریلی عبدالستار ایدھی چوک پہنچ کر دھرنے میں تبدیل اس سے

قبل دھرنے کے شرکاء نے کوئٹہ پریس کلب کے سامنے احتجاجی مظاہرہ کیا اور مطالبہ کیا کہ انہیں مستقل کیا

جاے

ان مظاہرین کے مطابق وہ گذشتہ 15 سالوں نے عارضی بنیادون پر محکمہ تعلیم میں خدمات سرانجام دے رہے

ہیں لیکن حکومت کی جانب سے انہیں مستقل نہیں کیا جارہا ہے جس کے باعث ایک قلیل تنخوا میں حالیہ

مہنگائی میں انکا گذارہ مشکل ہوگیا

جس کے باعث وہ آج کوئٹہ کے سڑکوں پر احتجاج کرنے پر مجبور ہیں

ان ملازمین نے بلوستان حکومت کو خبردار کیا ہے کہ مطالبات کی منظوری تک ان کا دھرنا جاری رہے گا،

انہون نے تنخواہوں میں اضافے کے مطالبے کے ساتھ معلم القران اور عربی ٹیچر کے گریڈ میں اضافہ کیا

جائے،

اس کے علاوپ مہنگائی کے تناسب سے الاوانسس میں اضافہ کیا جائے،

مظاہرین نے کہا کہ محکمہ تعلیم میں 9 سو کنٹریکٹ کمیونٹی اساتذہ ہیں انہین مستقل کیا جائے

بتایا گیا ہے کہ دھرے میں کوئٹہ سمیت بلوچستان بھر سے جونئیر اساتذہ اور انکے بچوں کی ایک بڑی تعداد

شرکت کر رہی ہے

کوئٹہ : جونیئراساتذہ کا ریلی کے بعد ایدھی چوک پر دھرنا

جونیئراساتذہ کے دھرنے کے باعث کوئٹہ شہر میں ٹرئفک کا نظام ایک بارپھر درہم برہم ہوچکا ہے

کیونکہ پرنس روڈ ،زرغو ن روڈ اور جوائنٹ روڈ کی جانب سے ایدھی چوک کی جانب آنے والے گاڑیوں اور

اس میں سوار مسافروں کو سخت مشکلات کا سامنا ہے

کوئٹہ کے شہریوں کے اکثریت نے بھی بلوچستان حکومت باالخصوص صوبائی وزیر تعلیم نصیب اللہ مری سے

مطالبہ کیا ہے کہ جونیئر اساتذہ کے مطالبات پر سجیدگی سے غور کیا جاے –

جونیئراساتذہ نے اب سے تھوڑی دیر قبل دھرنا ختم کرکے واپس ایدھی چوک سے کوئٹہ پریس کلب پہنچ گیے جہاں یہ اساتذہ نماز مغرب کے بعد آئندہ کالحہ عمل کا اعلان کریں گے

Comments are closed.