Khabardar E-News

قانون اور عدالت کی عزت نہیں ہوگی تو افراتفری پھیلے گی، عمر عطاء بندیال

53

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

کوئٹہ ( خبردار نیوز ) سپریم کورٹ آف پاکستان کے چیف جسٹس عمر عطاء بندیال نے کہا ہے کہ ملک میں اگر قانون اور عدالت کی

عزت نہیں ہوگی تو افراتفری پھیلے گی

ان خیالات کا اظہار انہون نے آج سپریم کورٹ کوئٹہ رجسٹری میں استقبالیہ تقریب سے خطاب ہوے کیا

اس موقع پر سپریم کورٹ اور بلوچستان ہائی کورٹ کے ججز کے علاوہ وکلاء کی بڑی تعداد موجود تھی

چیف جسٹس نے کہا کہ نئی عمارت کے قیام سے حصول انصاف میں بہتری ہوگیاور دعاکی کہ اللہ ہم سے حق ، آئین اور قانون کے

فیصلے کروائے

انہوں نے کہا کہ انصاف کے لیے عمارتوں کی کوئی اہمیت نہیں ہوتی جبکہ قوموں کی تقدیر عدالتی فیصلوں سے نہیں بلکہ قیادت

سے ہوتی ہے

چیف جسٹس عمر عطاء بندیال نے کہا کہ بلوچستان کے لوگوں میں صلاحیتوں کی کمی نہیں ہے اور اس صوبے نے جتنی ترقی کرنی

تھی اتنی نہیں کرسکی

تاہم بلوچستان میں ترقی نہ ہونے کی ذمہداری صرف ریاست پر نہیں ڈال سکتے بلکہ ہر انسان کو اس کے لیے اپنا کردار ادا کرنا ہوگا

انہوں نے کہا کہ ملک میں قانون کی سپرمیسی ہونی چاہیےاور ترقی کے لیے قربانیاں دینی پڑتی ہیںاس وقت ملکی حالات ہمارے

سامنے ہیں سب کو اختلاف کو چھوڑ کر ملک کے لیے سوچنا چاہیے

چیف جسٹس نے کہا کہ ریاست ماں کی طرح ہوتی ہےاور شہریوں کو تحافظ دینا ریاست کی ذمہداری ہے

جبکہ عدلیہ کی ذمہ داری ہے ائین اور قانون کے مطابق اداروں کا تحافظ کرنا ہے

انہوں نے کہا کہ ملک مین قانون اور عدالتوں کا احترام ہونا چاہیےتاہم ماتحت عدلاتوں میں بدتمیزی اور بد نظمی نظر آتی ہے

اور اگر قانون اور عدالت کی عزت نہیں ہوگی تو افراتفری پھیلے گی

Comments are closed.