Khabardar E-News

گوادر پورٹ ، بلوچستان میں ترقی کی نئی راہیں کھیلیں گی ،صدر ڈاکٹرعارف علوی

92

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

اگر حکومت سیاسی احتجاج نمٹاتی رہے گی تواس سے ملک کی ترقی متاثر ہوگی ،آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع کا معاملہ دو ماہ قبل طے ہوچکا ہے اس میں کوئی ابہام نہیں ہےوزیراعلیٰ جام کمال کے کام سے متاثرہوں
بلوچستان اور پاکستان میں ترقی کے راستے تیزی سے کھل رہے ہیں پاکستان کو دنیا میں بہتر مقام مل رہا ہےحکومت کو کوئی خطرہ نہیں،پڑوسی ملک ان گڑھوں میں گر رہا ہے جن سے پاکستان نکل چکا ہے ،کوئٹہ میں پریس کانفرنس
کوئٹہ(این این آئی) صدرمملکت ڈاکٹرعارف علوی نے کہا ہے کہ حکومت کو کوئی خطرہ نہیں جس طرح آزادی مارچ اور دھرنے کو بغیر افراتفری اور طاقت استعما ل کئے بغیر ختم کرایا گیا اس پر حکومت کو مبارکباد دیتا ہوںپارلیمنٹ لڑے کم اور ملک کے لئے کام اورقانون سازی کرے اگر حکومت سیاسی احتجاج نمٹاتی رہے گی تواس سے ملک کی ترقی متاثر ہوگی ،آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع کا معاملہ دو ماہ قبل طے ہوچکا ہے اس میں کوئی ابہام نہیں ہے،گوادرپورٹ کی تکمیل سے بلوچستان میں ترقی کی نئی راہیں کھلیں گی صوبے میں معدنیات ،لائیو سٹاک،فشریز ،سیاحت جیسے شعبوں میں سرمایہ کاری کے وسیع مواقع موجود ہیں ۔ یہ بات انہوں نے پیر کو کوئٹہ میںپریس کانفرنس کرتے ہوئے کہی اس موقع پر گورنر بلوچستان جسٹس (ر) امان اللہ خان یاسین زئی ،وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان سمیت صوبائی وزراءبھی موجود تھے۔صدر مملکت ڈاکٹرعارف علوی نے کہا کہ بلوچستان میںلائیو سٹاک کے شعبے میں سرمایہ کاری کے بے شمار مواقع موجود ہیںکوئٹہ میں ایکسپو کانفرنس کے انعقاد سے سرمایہ کارمتوجہ ہونگے اور آکر دیکھیں گے کہ بلوچستان کتنا پرامن اورزرخیز ہے ۔انہوں نے کہا کہ بلوچستان میں معدنیات ،فشریز ،لائیو سٹاک سمیت دیگرشعبوں میں سرمایہ کاری کے وسیع مواقع موجود ہیںپاکستان کی خوش قسمتی ہے کہ جب سے سیکورٹی صورتحال بہتراور ملک میں اچھی قیادت آئی ہے دنیا اسے اچھے اندازسے دیکھ رہی ہے۔انہوں نے کہا کہ وزیراعظم کو لکھ کر بھیجا ہے کہ یوں محسوس ہورہا ہے کہ گزشتہ 10سے 15سال پاکستان دنیا کونظر نہیں آتا تھا یہاںعدم تحفظ اور امن وامان کی ابتر صورتحال کے بادل چھائے ہوئے تھے لیکن اب اچانک مطلع صاف ہوا ہے اور دنیا کو پاکستان میں سرمایہ کاری کے لحاظ سے بہت بڑی مارکیٹ دکھائی دے رہی ہے اوراس مارکیٹ میں معاملات کھلتے نظرآرہے ہیں لوگ اس کھلتی مارکیٹ میں سرمایہ کاری اس لئے بھی کرنا چاہتے ہیں کیونکہ پاکستان میں سیکورٹی کی صورتحال بہتر ہے سیاحت،معدنیات اورنوجوانوں پر سرمایہ کاری کے وسیع مواقع موجود ہیں۔انہوں نے کہا کہ میں وزیراعلیٰ بلوچستان جام کمال خان کے کام سے متاثر ہوں بلوچستان اور پاکستان میں ترقی کے راستے تیزی سے کھل رہے ہیں پاکستان کو دنیا میں بہتر مقام مل رہا ہے ۔انہوں نے کہا کہ وزیراعظم نے اقوام متحدہ میں تقریر کرکے مسلم امہ کی عکاسی کی ایران اورسعودی عرب کے درمیان امن کیلئے ثالثی کی پیشکش ،رجب طیب اردگان اور مہاتیر محمد کے ساتھ ملکرمشترکہ چینل کھولنے کی پیشکش کی ۔انہوں نے کہا کہ ہندوستان نے غیرقانونی طور پر پاکستان پرحملہ کیا جوکہ خراب اور ظالمانہ حرکت تھی اس کے جواب میں ہماری فورسز نے منہ توڑ جواب دیا اور دنیا کواحساس دلایا کہ پاکستان اگرچہ افواج کے لحاظ سے چھوٹا ملک ہے لیکن ہم اپنے دفاع میں منہ توڑ جواب دینا جانتے ہیں اللہ کے فضل سے ملک ہر چیز میں مثبت راہ پر گامزن ہے ۔صدرممکت نے مزید کہا کہ آرمی چیف کی مدت ملازمت میں توسیع کا معاملہ دو ماہ پہلے طے ہوچکا ہے اس میں کوئی ابہام باقی نہیں رہا ۔انہوں نے کہا کہ حکومتی فیصلوں کے خلاف اگر لوگ عدالتوں میں جارہے ہیں اس سے ثابت ہوتا ہے کہ ہماری عدالتیں کھلی ہیں جس کسی کو بھی کوئی پریشانی ہو یا اعتراض ہو وہ عدالت جاسکتا ہے اسمیں کوئی حرج نہیں ۔صدرعارف علوی نے کہا کہ اسلام آباد میں مارچ اوردھرنے کو بغیر تشدد ،افراتفری ،آنسو گیس،پتھرا¶ یا جانی نقصان کے ختم کروانے پر حکومت کو مبارکباد دیتا ہوں۔ ایک سوال کے جواب میں انہوں نے کہا کہ حکومت کو کوئی خطرہ نہیں میں جب تک زندہ ہوں مجھے صرف موت کا خطرہ ہے حکومت اور پاکستان جتنا مستحکم ہونگے ہماری ترقی کے امکانات اتنے ہی روشن ہونگے پاکستان نے کشمیر کے معاملے پر جو کردارادا کیا ہے اس پر پوری قوم کو مبارکباد دیتا ہوں پڑوسی ملک ان گڑھوں میں گر رہا ہے جن سے پاکستان نکل چکا ہے ہم نے ملک کو منافرت کی سیاست سے پاک کردیاہے پاکستان کے اندر لوگوں میں تقسیم اورتفریق ختم ہوچکی ہے پاکستان کو نہ کوئی خطرہ ہے اورنہ ہوگا ۔ایک اور سوال کے جواب میں ڈاکٹرعارف علوی نے کہا کہ نیب اگر کوئی غیرقانونی کام کر رہا ہے تواسے سامنے لایا جائے ۔انہوں نے کہا کہ جمہوری قوتوں کا جائز حق ہے کہ وہ احتجاج کریں لیکن احتجاج کرتے وقت یہ بھی خیال رکھا جائے کہ پاکستان ایک ابھرتی ہوئی قوم ہے اس کا فوکس تبدیل نہ ہو ۔انہوں نے کہا کہ جتنی توجہ حکومت اورکابینہ سیاسی مسائل کے حل پر دے گی ملک کی ترقی کا مسئلہ اتناہی نظرانداز ہوگا ۔انہوں نے کہا کہ میں کوئی سیاسی بیان نہیں دے سکتا لیکن پارلیمنٹ قانون سازی اور کام کرے اور لڑے کم اس طرح پاکستان کے معاملات آگے جائیں گے انہوں نے کہا کہ وزیراعلیٰ بلوچستان کو دیکھ کر محسوس ہورہا ہے کہ وفاقی اور صوبائی حکومتوں میں ہم آہنگی ہے ریکوڈک کے کیس سے نکلنے میں اللہ تعالیٰ مددکریگا گوادرپورٹ اور سی پیک کے راستوں کی تکمیل سے دنیا بھر کے ممالک پاکستان کی طرف متوجہ ہونگے بالخصوص بلوچستان میں ترقی کی نئی راہیں کھلیں گی

Comments are closed.