Khabardar E-News

سانحہ چاغی کے خلاف بلوچستان میں وکلاء کا عدالتی بائیکاٹ

35

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

کوئٹہ ( خبردار ڈیسک ) چاغی واقعہ کے خلاف بلوچستان بار کونسل کی اپیل پر منگل کو کوئٹہ سمیت

بلوچستان بھر میں وکلاء نے عدالتی کاروائی کا بائیکاٹ کیا یے

جس کے باعث سائلین کو مشکلات کا سامنا کرنا پڑا

بلوچستاں بار کونسل کے وائس چیرمین قاسم علی گاجزئی کے مطابق آج احتجاجاً وکلاء عدالتوں میں پیش نہیں

ہوے ہیں

اس موقع پر وکیل رئنما راحب بلیدی ایدوکیٹ نے کہا ہے کہ چاغی میں نہتے عوام پرسیکورٹی فورسسز کی

جانب سے فائرنگ اور ہلاکتوں کا ہونا قابل مذمت ہے،

سانحہ چاغی کے خلاف بلوچستان میں وکلاء کا عدالتی بائیکاٹ

بقول انکے مظاہرین پر فائرنگ مکمل طور پر غیر قانونی عمل ہے،

بلوچستان بار کونسل کے بیانیے کے مطابق دنیا کے سب سے بڑے منصوبے ریکوڈک اور سیندک چاغی میں

ہیں

اس کے باوجود وہاں کے عوام روزگار کیلئے در بدر کی ٹھوکریں کھا رہے ہیں

جو حکومت کے لیے ایک سوالیہ نشان ہے

دوسری جانب وزیراعلی بلوچستان میر عبد القدوس بزنجو نے بھی چاغی میں فائرنگ کے واقعہ کا نوٹس لیا ہے

ترجمان حکومت بلوچستان ، فرح عظیم کی جانب سے جاری ہونے والے ایک بیان میں بتایا گیا ہے کہ

وزیراعلیٰ بلوچستان میرعبدالقدوس بزنجو نے نہ صرف ضلع چاغی میں پیش انے والے واقعے کا نوٹس لے لیا

بلکہ چاغی میں ڈرائیور کے جان بحق ہونے کے واقعے سے پیدا ہونے والے صورتحال کا جائزہ لیا جا رہا ہے

ترجمان کے مطابق وزیراعلیٰ نے کمشنر درخشاں ڈویژن سے صورتحال کے حوالے سے فوری اور جامع

رپورٹ طلب کی ہے

تاکہ کسی سے ناانصافی نہ ہو اور انصاف کے تمام تقاضے پورے کئے جائیں گے

اس سے قبل وزیراعلی بلوچستان نے ڈپٹی کمشنر چاغی اور دالبندین اورتفتان کے اسسٹنٹ کمشنرز کو تبدیل

کرنے کے احکامات جاری کئے

تھے

تاہم ترجمان کا کہنا ہے کہ چاغی میں پیش انے والے واقعے کی تمام زاویوں سے تحقیقات کی جا رہی ہیں

اور یقین دھانی کرائی کہ ڈرائیور کے لواحقین سے کوئی ناانصافی نہیں ہوگی ، چاغی کے عوام پرسکوں رہیں

Comments are closed.