Khabardar E-News

کوئٹہ: کچھی میں پانچ افراد کا قتل ،ملزمان کی عدم گرفتاری کے خلاف دھرنا

8

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

کوئٹہ ( خبردار نیوز ) بلوچستان کے علاقے کچھی میں پانچ افراد کے قتل اور ملزمان کی عدم گرفتاری کے

خلاف مقامی لوگوں کی جانب سے بلوچستان اسمبلی کے سامنے دھرنا جاری ہے

دھرنے کی قیادت پاکستان تحریک انصاف ( پی ٹی آئی ) کے صوبائی پارلیمانی لیڈر یار محمد رند کر ریے ہیں

انہوں نے بلوچستان حکومت کو قاتلوں کی گرفتاری کے لیے 48 گھنٹے کا وقت دہتے ہوے الزام لگایا ہے کہ

صوبائی حکومت قاتلوں کی پشت پناہی کر رہی ہے،

اس موقع پر خبردار نیوز سے بات چیت کرتے ہوے بلوچستان اسمبلی میں پاکستان تحریک انصاف کے صوبائی

صدر سردار یار محمد رند نے کہا کہ  بلوچستان میں کوئی احساس نہیں ہے

کیونکہ یہ لوگ گذشتہ پانچ دنوں سے احتجاج پر ہیں

پہلے انہوں نے کچھی میں کوئٹہ سبی شاہراہ کو چالیس گھنٹوں سے زیادہ وقت کے لیے بند کیا تھا بعد یہ لوگ

کوئٹہ پہنچ گئے

سردار رند کے مطابق  بلوچستان انصاف نام کی کوئی چیز نہیں ہے اور اعوان برادری کے آٹھ سے دس

گھرانے کچھی میں آباد ہیں لیکن انکے لوگوں کے قاتل گرفتار نہیں ہورہے ہین

انہوں نے بلوچستان کے سیاسی جماعتوں سے بھی گذارش کی کہ اس غریب خاندان کی مدد کریں اور انکی جد

وجہد میں ساتھ دیں

یاد رہے کہ نومبر میں مسلح افراد کی فائرنگ سے پانچ افراد جاں بحق ہوئے تھے۔

جس پر مقدمہ سابق صوبائی وزیر عاصم کرد گیلو سمیت 9 افراد کے خلاف درج کیا گیا تھا

کوئٹہ: کچھی میں پانچ افراد کا قتل ،ملزمان کی عدم گرفتاری کے خلاف دھرنا

اس سے قبل کچھی کے لوگوں نے 17 نومبر کو بولان میں سندھ کو ملانے والی قومی شاہر اہ کو بند کیا تھا

جس کے باعث شہریوں کو شدید مشکلات سے دو چار ہونا پڑا

مظاہر ین نے اس وقت بھی مطالبہ کیا تھا کہ 5 افراد کے قتل میں ملوث ملزمان کو فوری طور پر گرفتار کیا

جاے

بصورت دیگر وہ سخت اقدام اٹھانے پر مجبور ہو جائینگے

بولان : پانچ افراد کے قاتلوں کی عدم گرفتاری کےخلاف سندھ بلوچستان قومی شاہراہ بند

Comments are closed.