Khabardar E-News

آزادی مارچ: مولانافضل الرحمان کا15افراد اسلام آباد لانے کااعلان

198

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

یہ حکومت نااہل اور ناجائز ہے، ملک کی معیشت تباہ ہوگئی ہے ملازمین کو تنخواہیں دینے کےلئے پیسے نہیںہیںروزگاردیناتودرکنارلاکھوں نوجوانوں کوبے روزگارکردیاگیاہے
حکومت نے کشمیر کا سودا کردیا ہے،اب گلگت بلتستان کی باری ہے، سیاسی جماعتیں اسلام آباد میں ہمارے ساتھ آنا چاہتی ہیں، کچھ آگے پیچھے جاتی ہیں مگر آخر میں سب ہمارے ساتھ آئیں گی
اسلام آباد (نامہ نگار)جمعیت علمائے اسلام (ف) کے سربراہ مولانا فضل الرحمٰن نے آزادی مارچ کے موقع پر اسلام آباد میں 15لاکھ افراد لانے کا اعلان کردیا۔اسلام آباد میں جے یو آئی (ف) ورکرز کنونشن سے خطاب میں مولانا فضل الرحمٰن نے کہا کہ یہ حکومت نااہل اور ناجائز ہے، ملک کی معیشت تباہ ہوگئی۔انہوں نے کہاکہ ملازمین کو تنخواہ دینے کے پیسے نہیں ہیں، روزگار دینا تو درکنار لاکھوں نوجوانوں کو بے روزگار کردیا گیا۔جے یو آئی (ف) کے سربراہ نے مزید کہا کہ تاجر طبقہ ٹیکسوں کی بھرمار اور رکاوٹوں کی وجہ سے پریشان ہے۔ان کا کہنا تھاکہ ہمارا وزیراعظم کہتا تھا کہ مودی جیتے گا تو کشمیر کا مسئلہ حل ہوگا، اب ہمیں پاکستان کی بقا کی بھی جنگ لڑنی ہے، حالات ایسے ہوگئے ہیں اب کوئی جماعت پیچھے نہیں رہ سکتی۔مولانا فضل الرحمٰن نے یہ بھی کہاکہ حکومت نے کشمیر کا سودا کردیا ہے،اب گلگت بلتستان کی باری ہے۔انہوں نے کہاکہ ہم نے پورے ملک میں 15 مرتبہ ملین مارچ کیے ہیں، ہم سات آٹھ ماہ میں پاکستان کے ڈیڑھ کروڑ عوام سے مخاطب ہوئے۔جے یو آئی (ف) کے سربراہ کا کہنا تھا کہ ملک میں کوئی ایسا طبقہ نہیں جو مشکل کا شکار نہ ہو، اب ہم نے پاکستان کی بقا کی بھی جنگ لڑنی ہے۔مولانا فضل الرحمٰن نے کہا کہ سیاسی جماعتیں اسلام آباد میں ہمارے ساتھ آنا چاہتی ہیں، کچھ آگے پیچھے جاتی ہیں مگر آخر میں سب ہمارے ساتھ آئیں گی

Comments are closed.