Khabardar E-News

بلوچستان یونیورستی کوئٹہ کے ملازمین تنخواہوں کی عدم آدائیگی پر سراپا احتجاج

183

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

کوئٹہ ( خبردار نیوز ) جوائنٹ ایکشن کمیٹی جامعہ بلوچستان کے زیر اہتمام جامعہ بلوچستان و ریسرچ سینٹرز

کے اساتذہ کرام، آفیسران اور ملازمین کی تین مہینوں کی تنخواہوں اور پنشنز کی عدم فراہمی کے خلاف آج

ریلی نکالی گئی

ریلی کے شرکاء کا کہنا تھا کہ ریسرچ سینٹرز کے اساتذہ کرام ، آفیسران اور ملازمین کو سالانہ بجٹ میں اعلان

شدہ 35 فیصد اور ہاؤس ریکوزیشن کی عدم ادائیگی اور جامعہ بلوچستان کی مالی بحران کی مستقل حل کیا

جاے

یاد رہے کہ جامعہ بلوچستان کے مین گیٹ پر انتہائی سخت سردی اور بارش میں احتجاجی کیمپ لگایا گیا جس

میں درجنوں اساتذہ کرام ،آفیسران اور ملازمین نے شرکت کی۔

ریلی کے شرکاء نے اپنے جائز اور بنیادی حق ماہانہ تنخواہوں اور پنشن کے لئے زبردست نعرے بازی کی۔

ریلی سے پروفیسر ڈاکٹر کلیم اللہ بڑیچ، شاھ علی بگٹی، نذیر احمد لہڑی، فریدخان اچکزئی، نعمت اللہ کاکڑ، گل

جان کاکڑ، سید شاہ بابر اور حافظ عبدالقیوم نے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ انتہائی افسوسناک بات ہے کہ جامعہ

بلوچستان کے اساتذہ کرام، آفیسران اور ملازمین تنخواہوں اور پنشنز سے محروم ہیں جو انتہائی ظالمانہ اقدام

ہے۔

مقررین نے مرکزی و صوبائی حکومت، گورنربلوچستان اور ایچ ای سی سے پرزور مطالبہ کیا کہ خدارا جامعہ

بلوچستان کے مالی بحران کا مستقل حل نکالے اور تین مہینوں کی تنخواہوں اور پنشنز کےلئے فوری طور پر

بیل آوٹ پیکیج کا اعلان کریں۔

قبل ازیں وائس چانسلر بلوچستان یونیورسٹی کی جوائنٹ ایکشن کمیٹی کے اساتذہ کرام، آفیسران اور ملازمین کی

تنخواہوں کی عدم ادائیگی کے خلاف احتجاجی کیمپ میں آمد اور اساتذہ کرام ,افسران اور ملازمین کے ساتھ

یکجہتی کا اظہار کیا اور انہیں تعلمی سلسلے میں خلل نہ ڈالنے کی ہدایت کی

Comments are closed.