Khabardar E-News

کوئٹہ: سپریم کورٹ میں 57ہزار سے زائد کیسز التواء کاشکار ہیں،منیر احمد کاکڑایڈوکیٹ

69

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

کوئٹہ ( خبردار نیوز ) پاکستان ،بلوچستان ہائیکورٹ اور کوئٹہ بار ایسوسی ایشن کے نمائندوں نے کہا ہے کہ

ملک میں لاکھوں کیسز التواء کاشکار ہیں اور 57 کیسز ایسے ہیں جو سپریم کورٹ میں زیر التواء ہیں

کوئٹہ میں وکلاء نمائندوں کی مشترکہ پریس کانفرنس سے خطاب کرتے ہوے ممبر پاکستان بار کونسل منیر احمد

کاکڑ ایڈوکیٹ نے کہاکہ بلوچستان کے وکلا جوڈیشل کمیشن میں۔ججز کی تقریری کے معاملے پر ایک پیج پر

ہےسپریم کورٹ میں ججز کی تقریری کاعمل صاف اور شفاف ہونا چاہیے،

انکے مطابق آٹھاروِیں ترمیم میں ججز کی تقریری کو متازعہ بنایاگیا ہے جس کے باعث ہائیکورٹ اور سپریم

کورٹ میں من پسند ججز کی تعیناتی سے میرٹ کی پامالی ہوئی ہیں

انہوں نے کہا کہ وکلا نمائندوں جوڈیشل کمیشن کے ممبران کی کوششوں کے بعد چیف جسٹس آف پاکستان نے

رولز میں ترمیم کے لیے کمیٹی تشکیل دی ہےاور چیف جسٹس آف پاکستان س اصولوں پر سودے بازی نہ

کریں،

ممبر پاکستان بار کونسل نے واضع کیا کہ کوئی بھی توسیع ذاتی فائدے کے لیے ہوتوایسے مستردکرتے ہیں

ملکی صورتحال کو مد نظر رکھتے ہوے منیر احمد کاکڑ نے سپریم کورٹ اور تمام ہائیوکرٹس میں ججز کی

تقریری کے عمل کو موخرکرنے کا مطالبہ کیا اور آئین کی پاسداری کی جاے

ایک سوال کے جواب میں انہوں نے لاہور میں وکلابرادی پر لاٹھی چارج کرنے کی شدید الفاظ میں مزمت

کرتے ہوے بتایا کہ بلوچستان کے لاہور واقعہ پر وکلابرادری سے اظہار یکجہتی کے لیے عدالتوں کا بائیکاٹ

کریں گے

Comments are closed.