Khabardar E-News

خیبرٍپشتونخوا حکومت کا تعلمی اداروں میں زیادہ ترپرانی کتابیں پڑھانے کا فیصلہ

104

Get real time updates directly on you device, subscribe now.

پشاور( خبردار نیوز ) حکومت خیبر پختونخوا نے درسی کتابوں کے حوالے سے مصالحتی کمیٹی کے تجاویز

منظور کرلئے، جس کے مطابق تمام سرکاری اسکولوں میں نرسری سے جماعت سوم تک مفت کتابیں شائع

کئے جائیں گے،

خیبرپختونخوا ایلیمنٹری اینڈ سیکنڈری ایجوکیشن ڈیپارٹمنٹ کے اعلامیہ کے مطابق سال 2024اور25 کے

چوتھی، پانچویں جماعت کی کتابیں80 فیصد مفت شائع کئے جائیں گے،

اس کے علاوہ سال 2024اور 25 کےچوتھی، پانچویں جماعت کیلئے 20 فیصد پرانی کتابیں استعمال کی جائے

گی،

اعلامیہ میں مذید کہا گیا ہے کہ چھٹی سے بارہویں جماعت تک 50 فیصد کتابوں کی مفت اشاعت کی جائے

گی،جبکہ چھٹی سے بارہویں جماعت تک 50 فیصد پرانی کتابیں استعمال کی جائیگی،

اس کے علاوپ تمام اسکول پرنسپلز طالب علموں سے پرانے کتابیں اکھٹے کریں گے، اور متعلقہ افسران طالب

علموں کو اپنی کتابیں صحیح حالت میں رکھنے کی ترغیب دیں گے،

اعلامیہ کے مطابق نصاب کو تبدیل کئے بغیر کتابوں کی سائز کو بھی کم کر دیا جائے گا، سال 2025اور 26

میں کتابوں کی سائز کو کم کردیا جائے گا،

ساتھ ہی اساتذہ اور دیگر اسکول اسٹاف کتابوں کی سافٹ کاپیاں استعمال کریں گے،

ماہرین نے حکومت خیبر پشتونخوا کے اس فیصلے کاخیرمقدم کیا ہے اور کہا کہ اس فیصلے سے نہ صرف طلبہ کو فائدہ بلکہ حکومت کو بھی اخراجات میں نفی ہوگی

Comments are closed.